بھارتی لڑکی عظمیٰ کو وطن واپس جانے کی اجازت

اصل امیگریشن فارم حوالے کر دیا گیا ، عدالت کے فیصلے کے بعد عظمیٰ کمرہ عدالت میں گر کر بیہوش ہوگئی

اسلام آباد (دنیا نیوز ) اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھارتی شہری عظمیٰ کو وطن واپس جانے کی اجازت دے دی ۔ عظمیٰ نے تھيليسميا کے مرض ميں مبتلا بيٹی کی تيمارداری کيلئے واپس جانے کی درخواست دائر کی تھی ۔

عظمیٰ اور طاہر کی شادی میں اہم موڑ آگیا ۔ عظمیٰ کو بھارت واپس جانے کی اجازت مل گئی ، عظمیٰ کا شوہر طاہر سے بات کرنے سے انکار ، عدالت میں بے ہوش ہو کر گر پڑیں ۔ جسٹس محسن اختر کيانی نے عظمیٰ کی بیٹی کی ميڈيکل رپورٹ کو مدنظررکھتے ہوئے اسے بھارت جانے کی اجازت دے دی ۔

عدالت نے کہا کہ عظمیٰ طاہر سے بات کرنا چاہیے تو کسی کو کوئی اعتراض نہیں ۔ ميڈيا سے گفتگو میں عظمیٰ کے وکیل نے کہا کہ عظمیٰ شادی کو مانتی ہی نہیں تو ملاقات کا کیا سوال؟عدالت کی ڈسپنسری میں عظمی کا طبی معائنہ کیا گیا جس کے بعد وہ چلی گئیں ۔

طاہر علی کا گفتگو میں کہنا تھا کہ عظمیٰ بھارت جانے کے غم میں بے ہوش ہوئیں ۔ طاہر علی کا کہنا تھا کہ عدالت نے کہیں بھی نہیں کہا کہ یہ نکاح نامہ جعلی ہے ۔ سماعت آئندہ ہفتے تک ملتوی کر دی گئی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں