مسلم لیگ ن کو ووٹ دینا شرعاََ حرام، ناجائز اور گناہ علمائے کرام نے فتویٰ جاری کر دیا

اسلام آباد(آرڈبلیوپی نیوز)مسلم لیگ ن کو ووٹ دینا حرام، ناجائز اور گناہ قرار، فیصل آباد میں علمائے کرام کا پریس کانفرنس سے خطاب۔ تفصیلات کے مطابق فیض آباد دھرنے پر حکومت کی جانب سے طاقت کے استعمال اورشرکا پر تشدد کے بعد پورے ملک میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے جبکہ پورے ملک میں اس حکومتی اقدام کو مختلف طبقہ ہائے فکر کی جانب سے بھی شدید تنقید کا سامنا ہے۔ فیصل آباد میں علمائے کرام نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کو ووٹ دینا حرام ،نا جائز اور گناہ قرار دے دیاہے۔ علماء کا

کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن کے حکمران اس ملک پر حکمرانی کرنے کا آئینی ،قانونی،اخلاقی اور شرعی حق کھو چکے ہیں اور قرآن کو سنت کی روشنی کے میں انکو آئندہ الیکشن میں ووٹ دینا حرام ،نا جائز اور گناہ ہے ۔ایسا کرنا نہ صرف حرام ،نا جائز اور گناہ ہے بلکہ ملک پاکستان کی عوام کے ساتھ شدید ظلم اور زیادتی ہے۔واضح رہے کہ فیض آباد دھرنے کے خلاف آپریشن کے بعد پورے ملک میں مظاہرے پھوٹ پڑے تھے جبکہ اس کے خلاف شدید ردعمل سامنے آیا تھا اور مظاہرین نے ن لیگ کی اہم رہنمائوں، چوہدری نثار کے گھر پر ہلہ بول دیا تھا جبکہ مظاہرین کی جانب سے کئے گئے پتھرائوکے نتیجے میں لیگی رہنما جاوید لطیف زخمی ہو گئے تھے جبکہ پورے ملک سے آنیوالے ردعمل کے نتیجے میں حکومت نے دھرنے کے شرکا کی شرائط تسلیم کرلی ہیں اور وفاقی وزیر قانون زاہد حامد مستعفی ہوچکے ہیں اور وزیراعظم نے ان کا استعفیٰ قبول کر لیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں